فاٹا میں پولیس نظام کی توسیع کا منصوبہ شدید مشکلات کا شکار

پاکستان

فاٹا میں پولیس نظام کی توسیع کا منصوبہ شدید مشکلات کا شکار ہوسکتا ہے: خصوصی رپورٹ

خیبر پختونخواہ میں پولیس افسران کی کمی کی وجہ محکمہ پولیس کے لئے فاٹا میں پولیس کی توسیع انتہائی مشکل کام ہے. محکمہ پولیس کی طرف سے خیبر پختونخواہ حکومت کو ایک خط میں لکھا گیا ہے کہ صوبے کو 113 اعلی پولیس افسیرز کی ضرورت ہے لیکن اس وقت 71 دستیاب جبکہ 42 کی کمی ہے.

پولیس کا خط بنام صوبائی حکومت پشاور میں مقیم صحافیوں نے پڑھ لیا جس میں واضح طور پر کمی کے اسباب کی نشاندہی نہیں کی گئی ہے لیکن فاٹا تک پولیس نظام کی توسیع میں مشکلات کا کھل کر اظہار کیا گیا ہے.

گزشتہ ایک عشرے سے زائد جاری دھشت گردی کے خلاف جنگ میں خیبرپختونخواہ کے کئے اعلی پولیس افسیران جام شہادت نوش کرچکے ہیں. صوبے کے سابق پولیس سربراہ کے بقول دیگر صوبوں سے تعلق رکھنے والے پولیس افیسرز دھشت گردی کی وجہ سے کے پی کے میں تعیناتی اور ڈیوتی دینے سے کتراتے ہیں جو کہ ممکنہ وجوہات میں ایک ہوسکتی ہے.

سابق پولیس سربراہ اختر شاہ کا کہنا ہے کہ پاکستان میں پولیس افسران مرکزی حکومت کے ادارے فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے زریعے امتحان کے مختلف مراحل سے گزار کر صوبوں میں‌ تعنیات کئے جاتے ہیں لیکن 2018 میں صوبائی حکومت نے ایک قانون پاس کیا تھا جس کے رو سے صوبائی حکومت صوبائی پبلک سروس کمیشن کے زریعے بھی پولیس افسیران کی تعیناتی کا اختیار رکھتی ہے اور حکومت کو چاہئے کہ اس قانون کو بروئے کار لاکر محکمہ پولیس میں افسران کی کمی کو پورا کرے.

یادرہے کہ خیبر پختونخواہ پولیس نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فرنٹ لائن فورس کا کردار بخوبی ادا کیا ہے اور عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی حکومت کے دوران پولیس فورس کی تعداد میں اضافے کیساتھ ساتھ تنخواہوں اور مراعات بھی خاطرخواہ اضافہ کیا گیا تھا.

Lack of Police Officers in KPK. Updated Pakistan

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے