بخت زادہ دانش کا شہرہ افاق نظم دوزخی اب علی بابا خان کے دلنشین موسیقی کے ساتھ

پاکستان فن فنکار

ویب ڈیسک.
ایک طرف بخت دانش نے گزشتہ کئے سالوں سے پشتو شاعری کے میدان میں دھماکہ خیز انداز سے انٹری دیکر لوگوں کو اپنے طرف متوجہ کیا ہےاور پاکستان وافغانستان کے علاوہ دنیا بھر میں موصوف کے لاکھوں پرستار پیدا کرچکے ہیں تو وہاں نوجوان گلوکار علی بابا خان اپنے منفرد موسیقی ، شاعری کے بہترین انتخاب کے بدولت اچھی ، معیاری شاعری اور موسیقی کے شغف رکھنے والوں کو اپنا دیوانہ بناچکے ہیں. علی باابا نے جدید اور کلاسیک موسیقی کوامیزش سے پشتو گائیکی کو مزید جدت سے اشنا کردیا ہے اور صوفیانہ شاعری کے ساتھ موسیقی کے بہترین تجربات نے علی بابا کو ہردلعزیز بنادیا ہے.
زہ بہ نہ لیونے کیگیم ، دا چی ستا دہ خلے خبرہ دہ باچا اور اسطرح کئے دیگر ہٹ نظموں کے علاوہ بخت زادہ دانش کے جس کلام نے اجکل دھوم مچائی ہوئی ہے وہ ہے خو بیا ھم دوزخی یم .

سونے پہ سہاگہ یہ کہ نظم اپنے نواجوان گلوکار علی بابا خان نے اپنے خوبصورت اواز، منفرد موسیقی کے ساتھ گاکر سوشل میڈیا پرجاری کردیا ہے اور صرف 24 گھنٹوں کےدوران شعروادب اور موسیقی کے دلدادہ افراد نے فیس بک یوٹیوب اور سماجی رابطوں کے دیگر ویب سائیٹس پر 10 لاکھ سے زیادہ مرتبہ وزٹ اور ہزاروں مرتبہ شئیر کیا ہے جو بخت زادہ دانش کی شاعری اور علی بابا خان کی موسیقی سے عوامی دلچسپی کا بہترین مظہر ہے. اس نظم کو اپ علی بابا خان کے افیشل یوٹیوب اکاونٹ علی بابا خان ریکارڈ کے علاوہ بی ٹی این فیس بک پیچ پر دیکھ سکتے ہیں.
یاد رہے کہ دو ہفتے قبل علی بابا خان نے پشتون تحفظ مومنٹ کے سربراہ منظور پشتین کو خراج عقیدت کے لیے روح دہ باچا خان یم نامی نظم کو گاہ کرعوام اور خواص میں مقبولیت حاصلی کی تھی.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے