داڑھی کی وجہ سے غیرضروری تلاشی کا سامنا کرناپڑتا ہے. علیم ڈار

پاکستان کھیل

عالمی ریکارڈ یافتہ اور تجربہ کار پاکستانی کرکٹ امپائیر علیم ڈار نے کہا کہ باہر کے ممالک میں روکا جاتا ہے اور داڑھی رکھنے کے بعد غیر ضروری تلاشی کا سامنا کرنا پڑتا ہے. علیم ڈار نے یہ بھی انکشاف کیا کہ داڑھی رکھنے کے بعد انہیں بعض حلقوں کی طرف سے شدید تنقید کا سامنا بھی کرنا پڑرہا ہے لیکن مجھے داڑی رکھنے اور سنت نبوی ﷺ پر فخر ہے.

علیم ڈار نے یہ بھی انکشاف کیاکہ داڑھی جنوبی افریقا کے بیٹسمین ہاشم آملہ کے کہنے پر رکھی انہوں نے مجھ سے داڑھی رکھنے کی در خواست کی تھی. اردو روزنامہ جنگ کے مطابق علیم ڈآر نے کہا داڑھی رکھنا شان اور فخر کی بات ہے اس کے سبب میں پاکستان کا سفیر بن گیا ہوں۔ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ غیر ممالک میں امیگریشن حکام میری تلاشی پرکچھ نہ ملنے پر شرمندہ بھی ہوتے ہوں گے۔

علیم سرور ڈآر عالمی شہرت یافتہ پاکستانی امپائر ہے جو 6 جون 1968 کو پیدا ہوئے اور تین سال مسلسل ائی سی سی کی طرف سے سال کے بہترین امپائر کا منفرد اعزاز رکھتے ہیں. 16 جنوری 2000 میں سری لنکا کے خلاف گوجرانوالہ ون ڈے میچ میں اپنے بین القوامی کرکٹ سفر کا اغاز کیا اور دو سال بعد ائی سی سی کے انٹرنیشنل پینل اف امپائرز کے باقاعدہ رکن بنے. علیم ڈار نے 2003 کے ورلڈ کپ میں پہلی مرتبہ بطور امپائر پاکستان کی نمائندگی کی.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے