نواز شریف اور مریم نواز کو صدارتی معافی مل سکتی ہے

پاکستان

اسلام اباد.
دی نیوز اور جنگ گروپ کے سینئرصحافی انصار عباسی نے اج کے روزنامہ جنگ میں شائع ہونے والے تجزیے میں لکھا ہے کہ جو لوگ عام انتخابات سے قبل نواز شریف اور اسکی بیٹی مریم نواز شریف کو جیل میں دیکھنا چاہتے ہیں، ان کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ائین کا ارٹیکل 45 ہے جس کے تحت صدرپاکستان وزیراعظم کے سفارش پر کسی بھی شخص کو عام معافی دے سکتے ہیں. اسلئے کیس کی میرٹ کے سے ہٹ کر خیال کیا جاتا ہے کہ احتساب عدالت نواز شریف ، مریم نوازاور کیپٹن صفدرکے خلاف فیصلے کو نگران حکومت تک لے جانا چاہے گے جہاں نگران حکومت موجودہ صدر ممنون کوعام معافی کی سفارش نہیں کرسکی گی اور اسطرح جیل جانا سابق راہنما کے لئے یقینی ٹہرے گا اور مخالفین کوازادانہ انتخابی مہم میں مظبوط حریف کی عدم موجودگی میں اسانی رہیگی.
یاد رہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے سابقہ حکومت نے ائین کے ارٹیکل 45 کے تحت صدرزرداری کے زریعے رحمان ملک کی سزامعاف کرائی تھی .

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے