انٹرنیٹ کے زریعے پیسے کمانے کا سب سے اسان طریقہ

پاکستان ٹیکنالوجی جابز/ملازمت کے مواقع

ویسے تو انٹرنیٹ پر ایسے سینکڑوں نہیں ہزاروں طریقے موجودہیں جسکے زریعے اپ اپنے صلاحیت ، قابلیت ، زبان وبیان، تحریر وتقریر کمپوٹر کی تجرے اور مہارت کو بروئے کار لاکر ہزاروں نہیں ماہانہ لاکھوں روپے کماسکتے ہیں، جی ہاں اپ نے غلط نہیں پڑھا، میں دوبارہ لکھ دیتا ہوں ہزاروں نہیں لاکھوں پاکستانی روپے بھی اور اپ تیز، شاطر،سمارٹ، مناسب طور پر پڑھے لکھے ہیں اور مناسب طریقے سے قدم بہ قدم سیکھنے کا عمل جاری رکھے گے تو یہ نمبرز گیم لاکھوں ڈالرز ماہانہ تک بھی ہوسکتاہے. میں نے لکھا نا: کہ ہزاروں طریقے ہیں اور لاکھوں ڈالر کمانے کے مواقع موجود ہیں اور انشاءاللہ زندگی رہی تو اپ کے سامنے اس میدان میں اپنے پانچ سالہ تجربات کو شئیرکرتارہونگا اور جو بھی طریقہ اپکے صلاحیت ، استعداد اور تعلیمی پس منظر کے مطابق ہوگا اپ اس ویب سائیٹ پر انتہائی اسان اور عامیانہ زبان میں سیکھ سکے گے. یاد رکھے تعلیمی پس منظر سے مراد کسی اعلی تعلیم کی ڈگری ضروری نہیں بس اپ کم ازکم دس جماعتیں پڑھ چکے ہو، اس سے زیادہ ہو تو نور علی نور یعنی سونے پہ سہاگہ.



یہ بھی لازمی نہیں کہ اپ انگریزی، اردو یا کسی بھی دوسری زبان کے اچھے لکھاری ہو، یابولنے پر عطاء اللہ شاہ بخاری مرحوم کی طرح قدرت رکھتے ہو تو اپ کماسکے گے ورنہ نہیں. یا یہ کہ اپ ایک اچھے ویڈیو ایڈیٹر ہے تو اپ کے لئے یہاں روزگار کے مواقع موجودہے ورنہ نہیں. ایسا ہرگزنہیں، یہ ایک وسیع دنیا ہے اور کھلا میدان ہے جہاں سب اگر دوڑ نہیں سکتے تو چہل قدمی ہر کوئی کرسکتا ہے.
اپ اگر ایک اچھے فوٹوگرافر ہے تو اپکے لئے درجنوں نہیں سینکڑوں ایسے ویب سائیٹ موجود ہیں جہاں اپکا ایک بھی اچھا تصویر اتنی قیمت پر بک سکتا ہے کہ اپکے مہینے بھر کی روزی روٹی،اور تعلیم جاری رکھنے کے خرچے کی ضروریات اسی ایک تصویر کی فروخت سے پوری ہوسکتی ہے. اس کے بارے میں ضرور اپکو ائندہ کے مضامین میں ضروربتاتا رہونگا.
لیکن اگر اپ فوٹوگرافی کے اتنے شوقین نہیں، بس اپ چاہتے ہیں کہ اپکے دوست ہو، اپ ہو، کوئی مناسب گاڑی ہواوروطن عزیز کے تمام خوبصورت اور پرفضامقامات ہو، دوستوں کے ساتھ اؤٹنگ ہو، پکنکس ہو، کھانے کے دور چلے .تو جان لے یہ شوق ، یہ مستی ، یہ اوارہ گردی بھی اپکے لئے ماہانہ ہزاروں روپے اوراگر اپ میرے اندازے سے بھی زیادہ اوارہ گرد ہیں تو ہزاروں ڈالرز کی کمائی کا زریعہ بھی بن سکتا ہے. تو گھومئے پھرئیے، یہ اپکا حق ہے اور خوب موج مستی کریں کہ یہی زندگی کا نام ہے. ہاں ایک اچھا کیمرا یا ایک اچھے کیمرے والا موبائل ضرور ساتھ لے جائیں، نہ صرف گھومنے پھرنے اورپکنک کا خرچہ پورا ہوگا بلکہ اپ بہت کچھ بچابھی سکے گے. کس طرح اور کیوں کر ؟؟ وہ تو میں اپکوبتاونگا اور ضروربتاونگا، میرا اپ سے وعدہ رہا. لکھ دیا وعدہ رہا، اپ بھی نوٹ فرماکر مجھے یاددلاتے رہیے.

فی الحال تو میں اپکو سب سے اسان طریقہ سب سے پہلے بتانے جارہاہوں. اپ نے دیکھا ہوگا پہلے وقتوں میں بہت زیادہ اور مجھے نہیں معلوم کہ اج کل بھی یہ دھندہ خوب چلتا ہے یا کچھ مندی ہوچکی ہے مجھے اس سے کوئی غرض بھی نہیں لیکن یاد دلاتاچلوں کہ کچھ لوگ موبائل فون کمپنیز کے گولڈن نمبرز حاصل کیا کرتے تھے اور بعد میں ہزاروں اور بعض اوقات لاکھوں میں شوقین افراد کو فروخت کرتے تھے لیکن ٹہرئیے میں اپکو موبائیل کمپنیز کے گولڈن نمبرز اور سم کارڈ ڈھونڈے کے کام پر نہیں لگا رہا یہ طریقہ پرانا ہوچکا ہے اور بہت پرانے کھلاڑی اس کھیل میں موجود ہیں تو کیوں نہ اس سے ملتا جلتا طریقہ لیکن مختلف طریقہ ڈھونڈا جائے جس کے لئے ضرورت بس ایک کمپوٹر، انٹرنیٹ کنکشن یا وہ موبائیل جس میں انٹرنیٹ کی سہولت موجود ہو.
کوئی لکھاری ہونا ضروری نہیں، کوئی ویڈیو بنانی کی ضرورت نہیں ، نہ کھانا پکانا سیکھانا ہوگا نہ انگریزی اردو بول چال اور نہ سارادن اشتہارات پر کلکس کرنا اور اخر میں مایوس ہوکر ان سب کو مزاق سمجھنا.
باتیں بہت ہیں اور ضروری بھی ہے کیونکہ اس ویب سائیٹ کے زریعے زندگی ملی تو اپ سے ملاقات ہوتی رہیگی کیونکہ ہم چاہتے ہیں کہ جو کچھ پانچ سال سے انٹرنٹ پر کام کرتے ہوئے سیکھا ہے وہ اپ کے ساتھ شئیرکریں. اپ میں سے کسی کو بھی فائدہ ہوگا تو ہمیں دلی خوشی ہوگی. چلوں چھوڑدواس تبلیغی انداز کے تمہحید کو اوراپ کو اب اخری پیراگراف کی طرف لے جاتا ہوں جہاں کام کی بات اسان سے اسان زبان میں سمجھانے کی کوشش کرونگا.

جسطرح موبائل کا نمبرہرانسان کی ضرورت ہے اسطرح انٹرنیٹ پر اچھے ویب سائیٹ ڈومین ایڈریس یعنی ڈیجیٹل پتہ بھی اکثر لوگوں ،اداروں، کھلاڑیوں، نیوزایجنسیوں، کھیل کے کلبوں، تعلیمی اداروں ، سرکاری اور غیرسرکاری اداروں کی ضرورت بن چکی ہے یا بن جائی گی اور اج نہیں تو کل وہ اپنا ویب سائیٹ بناناچاہے گے اور اس کے لئے وہ اپنے نام، اپنے ادارے ، اپنے علاقے ، اپنے کاروباری برانڈ کی نام سے ڈومین حاصل کرنے کے لئے Godaddy نامی ویب سائیٹ پر جاکر اسکو خرینا چاہے گے لیکن اگر اس شخص، کمپنی، ادارے سے پہلے اپ جیسے سوچنے سمجھنے والے افراد جاکر اس ڈومین کو اپنے نام کرچکے ہونگے اور وہ بھیصرف 200 روپے میں اور پھر اسی ویب سائیٹ پر ایک لاکھ روپے کی قیمت رکھ Godday یا ایک دوسرے ویب سائیٹ SEDO نامی ویب سائیٹ پر رکھ چکے ہونگے تو یاد رکھے، بڑے لوگ، بڑے کمپنیاں، بڑے ادارے اپنے ویب سائیٹ کو ایک لاکھ روپے پر نہیں ایک کروڑ روپے پر بھی حاصل کرنا چاہے گے کیونکہ یہ انکی برانڈنگ اور بزنس کے لئے ضروری ہوتا ہے.



اپکو یقین نہیں ارہا تو Sedo نامی ویب سائٹ کو وزٹ کرکے Flyoman.com کو سرچ کرکے دیکھ لے تو اپ حیران ہونگے کہ جس شخص نے یہ گولڈن ڈومین ایڈریس حاصل کرکے اپنے نام کی ہے اور اپ فروخت کرنا چاہتاہے تو اب تک کئے لوگوں نے اس ڈومین ایڈریس پر پچاس ہزار ڈالر یعنی پچاس لاکھ روپے سے زیادہ کی بولی لگادی ہے لیکن بہت ہی بڑے دل گردے کا مالک شخص ہے جو 200 روپے کی ویب سائیٹ کو پچاس لاکھ پر نہیں دینا چاہتا اور ھل من مزید کی انتظار میں ہے اور بلکل ٹھیک کررہاہے.

تو اپ بھی اپنے گردوپیش کے اہم افراد، اہم تعلیمی ، کاروباری ، سرکاری غیرسرکاری اداروں، نمایاں کھلاڑیوں ، نئے ابھرنے والے شوبز سٹارز، کرکٹرز پر نظر رکھے اور کوئی ایسا موقع ہاتھ اتی ہی Godaddy پر جاکر اسکاڈومین ایڈریس اپنے نام کرلے اور مناسب قیمت پر
Sedo پرپارک کرکے بہت ہی اسانی سے بہت زیادہ کماسکتے ہیں. اپ کسی مشہور شہر، جگہ، موقع، شاپنگ مال، سپر سٹور، سیاست دان ، سماجی شخصیت کے نام کا ڈومین ایڈریس ٹرائی کرسکتے ہیں. مثلاء یہ ہمارے صادق سنجرانی صاحب نئے نئے چیئرمین سینٹ بن چکے ہیں اپ چیک کرلے ، کسی چالاک نے خرید نہ لیا ہو تو اپ فوری لے لے. بکے گا یقین دلاتا ہوں.خیر یہ تو اپکو اسانی سے سمھجانے اور دماغی ایکسرسائز کے لئے ایک ٹپ دے دی ، اپ کسی بھی لائن پر سوچ سکتے ہیں ، سیاست کو فی الحال رہنے ہی دے.

یادرکھے اپ صرف ایک ڈومین، ایک درجن ایک ہزار ڈومین نہیں بلکہ ہزاروں ڈومین ایڈریس اپنے نام کرکے فروخت کے لئے رکھ سکتے ہیں. میرے اس وقت 50 کے قریب ویب سائیٹس پارک ہیں اور مزید کئے ایسے نام ذھن میں موجود ہیں جسکا مستقبل بہرحال ہے. مثال کے طور میرا ایک ویب سائیٹ ڈومین Khabarkaar کے نام سے Sedo پر موجود ہے اور یہ نیوز انڈسٹری کے حساب سے بہت ہی مناسب نام ہے.

اخری اور کام کی بات. میں نے ابتداء میں عرض کیا کہ یہ میرے پہلی کوشش تھی اور میں ائندہ کے لئے اپکو درجنوں اسان طریقے اپکے صلاحیت کے عین مطابق بہت ہی اسان زبان میں لے کر اؤنگا بس اپ یہاں کا وزٹ کرے اور یہ ارٹیکل اپی طرح اپکے پیارے پیارے دوستوں کے ساتھ ضرورشئیر کرے.
طالب دعا

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے